آ پھر سے کریں یار طرحدار کی باتیں – نظم

روزنامہ ’’الفضل‘‘ ربوہ 8؍اپریل 2008 ء میں مکرم انور ندیم علوی صاحب کا کلام شامل اشاعت ہے۔ اِس کلام میں سے انتخاب ہدیۂ قارئین ہے۔

آ پھر سے کریں یار طرحدار کی باتیں
خوشبو سے مہکتے ہوئے گلزار کی باتیں
خوابوں میں جو آتا ہے ، خیالوں میں رچا ہے
جو دل میں بسا ہے اُسی دلدار کی باتیں
ہر تیرِ ستم اپنے ہی سینے پہ جو روکے
جو ڈھال ہے مظلوم کی اُس یار کی باتیں
مت چھین مرے ہاتھ سے تُو تیغِ قلم کو
اب چھوڑ دے اے شیخ! یہ تلوار کی باتیں

0
یہ مضمون شیئر کرنے کے لئے یہ چھوٹا لنک استعمال کریں۔ جزاک اللہ [https://khadimemasroor.uk/HBHbZ]

اپنا تبصرہ بھیجیں