تمہارے آنے کی خبریں ہیں جب سے جوبن میں – نظم

روزنامہ ’’الفضل‘‘ ربوہ 7جون 2008ء میں مکرم ناصر احمد سیدؔ صاحب کا کلام شامل اشاعت ہے۔ اِس کلام میں سے انتخاب ہدیۂ قارئین ہے۔

تمہارے آنے کی خبریں ہیں جب سے جوبن میں
شفق سی پھوٹتی رہتی ہے میری دھڑکن میں
اسی خیال کے اندر ہے کائنات مری
کہ تُو بھی چاہتا ہے مجھ کو اپنے ہی من میں
وہ غم کی بندشوں سے خود ہی چھوٹ جاتا ہے
جسے تو باندھ لے اک بار اپنے بندھن میں
کبھی تو لوٹ کر آئے گا تیری راہوں پر
بھٹک رہا ہے زمانہ جو اب تلک بَن میں
خدا کے ہاتھ نے سینچا تھا جو درختِ وجود
صدی کے بعد بھی سایہ ہے اس کا گلشن میں

0
یہ مضمون شیئر کرنے کے لئے یہ چھوٹا لنک استعمال کریں۔ جزاک اللہ [https://khadimemasroor.uk/akpdc]

اپنا تبصرہ بھیجیں