جلوے اس کے موجزن ہیں گردشِ افلاک میں – حمدیہ کلام

روزنامہ ’’الفضل‘‘ ربوہ 19اگست 2008 ء میں مکرم طارق بشیر صاحب کا کلام شامل اشاعت ہے۔ اِس کلام میں سے انتخاب ہدیۂ قارئین ہے۔

جلوے اس کے موجزن ہیں گردشِ افلاک میں
چشم تر میں دیکھ اس کو دیدۂ نمناک میں
آسماں کی رفعتوں میں اس کی ہستی کا ثبوت
کہکشاں کی وسعتوں میں ذرہ ہائے خاک میں
راہگزر میں دیکھ اس کو جادۂ منزل پہ دیکھ
دیکھ دن کی روشنی میں رات وحشت ناک میں
کہکشاں میں دیکھ اس کو آتشِ خورشید میں
سیم و زر میں دیکھ اس کو یا خس و خاشاک میں
مہر و ماہ میں دیکھ اس کو رفعتِ کہسار میں
دیکھ دل کے آئینے میں سینۂ صد چاک میں

پرنٹ کریں
0
یہ مضمون شیئر کرنے کے لئے یہ چھوٹا لنک استعمال کریں۔ جزاک اللہ [https://khadimemasroor.uk/woiaQ]

اپنا تبصرہ بھیجیں