جو ہوش مند شخص ہے پُر درد ہے بہت – نظم

روزنامہ ’’الفضل‘‘ ربوہ 14اکتوبر 2004ء میں مکرمہ ارشاد عرشی ملک صاحبہ اپنی نظم بعنوان ’’وہی مرد ہے بہت‘‘ میں کہتی ہیں:

جو ہوش مند شخص ہے پُر درد ہے بہت
ہر باخبر کا چہرہ یہاں زرد ہے بہت
جب آنکھ بند ہوگی تو منظر کھلیں گے تب
دھندلے ہیں سب نقوش یہاں گرد ہے بہت
مُردے تو بہہ رہے ہیں بہاؤ کے ساتھ ساتھ
دریا کو چیر دے جو ، وہی مرد ہے بہت
اپنے لئے تو صرف محمدؐ مثال ہیں
دنیا کا رُخ بدلنے کو اک فرد ہے بہت

0
یہ مضمون شیئر کرنے کے لئے یہ چھوٹا لنک استعمال کریں۔ جزاک اللہ [https://khadimemasroor.uk/C6l77]

اپنا تبصرہ بھیجیں