ہم نے اک مرد باخدا دیکھا – نظم

رسالہ ’’احمدیہ گزٹ‘‘ کینیڈا جولائی تا ستمبر2008ء میں شامل اشاعت مکرم مبارک احمد ظفر صاحب کے کلام سے انتخاب ہدیۂ قارئین ہے:

ہم نے اک مرد باخدا دیکھا
نور ہی نور سے بھرا دیکھا
جس کو کم گو تھا اب تلک پایا
اس کو کل بولتے جدا دیکھا
اس کا ہر بول تھا خدائی بول
اس میں بس بولتا خدا دیکھا
تھا زبانوں پہ نعرۂ تکبیر
دل کو بھی عجز سے جھکا دیکھا

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں

ur اردو
X