ہے مداوا اس جہاں میں ہر کسی آزار کا – دعائیہ نظم

روزنامہ ’’الفضل‘‘ ربوہ 13؍اپریل 2009ء میں مکرم فاروق محمود صاحب کی ایک نظم شامل اشاعت ہے۔ اس نظم سے انتخاب پیش ہے:

ہے مداوا اس جہاں میں ہر کسی آزار کا
تُو ہی چارہ گر خدایا اس دلِ لاچار کا
جو حصار حق تعالیٰ میں ہوئے گوشہ نشیں
ڈر انہیں کچھ بھی نہیں ابلیس کی یلغار کا
تیرے حسنِ لازوال و بے خطا کے نُور سے
تیرہ شب میں بھی چمکنا حسن کی تلوار کا
ہم کو سینے سے لگا لے اے رفیق جانِ من
دَم گھٹا جاتا ہے پیارے اس ترے بیمار کا

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں

ur اردو
X