یاد کرکے اُسے تڑپا کروں، رویا کروں – نظم

سہ ماہی ’’خدیجہ‘‘ (سیدنا طاہر نمبر) میں شامل اشاعت مکرمہ سیدہ طیبہ زین صاحبہ کی ایک نظم سے انتخاب ہدیۂ قارئین ہے:

یاد کرکے اُسے تڑپا کروں، رویا کروں
اے غم دل کیا لکھوں، بے تابی ٔ دل کیا لکھوں
علم و عرفاں تھا وہ حسنِ عمل کا نُور تھا
نُور بے پایاں ہے اس کی انتہا کوئی نہیں
دل میں ہے یادوں میں ہے اب بھی آنکھوں میں ہے وہ
ہے بظاہر دُور لیکن فاصلہ کوئی نہیں
کتنا خوش خصلت تھا وہ اس کے خصائل کیا لکھوں
اے غم دل کیا لکھوں، بے تابی ٔ دل کیا لکھوں

50% LikesVS
50% Dislikes
0

اپنا تبصرہ بھیجیں