دل کی راحت کا یہ سامان رہے صدیوں تک – نظم

روزنامہ ’’الفضل‘‘ ربوہ 21؍مئی 2009ء میں مکرم عبدالصمد قریشی صاحب کی ایک نظم شامل اشاعت ہے۔ اس نظم سے انتخاب پیش ہے:

دل کی راحت کا یہ سامان رہے صدیوں تک
ہم پہ مولیٰ کا یہ احسان رہے صدیوں تک
تا قیامت رہیں ہم عشقِ محمدؐ کے اسیر
ہم فقیروں کی یہی شان رہے صدیوں تک
یوں ہی رحمت کا شجر ہم پہ رہے سایہ فگن
یوں ہی ہر درد کا درمان رہے صدیوں تک
یوں ہی اک شخص لٹاتا رہے چاہت کے گلاب
یوں ہی وہ ہم پہ مہربان رہے صدیوں تک
یہ گلستان سدا اس کی حفاظت میں رہے
ہاں خدا اِس کا نگہبان رہے صدیوں تک

0
یہ مضمون شیئر کرنے کے لئے یہ چھوٹا لنک استعمال کریں۔ جزاک اللہ [https://khadimemasroor.uk/USSCM]

اپنا تبصرہ بھیجیں