غیر تھا پہلے بھی حال دل مگر ایسا نہ تھا

روزنامہ ’’الفضل‘‘ ربوہ 3؍اپریل 2002ء میں مکرم سلیم شاہجہانپوری صاحب کی ایک نظم سے انتخاب پیش ہے:

غیر تھا پہلے بھی حال دل مگر ایسا نہ تھا
وہ جدا ہوجائے گا مجھ سے کبھی سوچا نہ تھا
دعویٰ داران محبت بھول جائیں گے ہمیں
دل میں ایسا وسوسہ بھی آج تک گزرا نہ تھا
ہم نے دانستہ رہ الفت میں رکھا ہے قدم
یہ غلط ہے پہلے کچھ سوچا نہ تھا

50% LikesVS
50% Dislikes
0

اپنا تبصرہ بھیجیں