کھینچ لائی عرش سے میری دعا تاثیر کو – نظم

روزنامہ ’’الفضل‘‘ ربوہ 24؍دسمبر 2002ء میں شامل اشاعت مکرم احسن اسماعیل صدیقی صاحب کی ایک نظم سے انتخاب پیش ہے:

کھینچ لائی عرش سے میری دعا تاثیر کو
سوز وہ بخشا ہے میرے نالۂ شب گیر کو
مَیں سراپا جرم و عصیاں وہ سراپا مہرباں
رشک سے دیکھیں فرشتے بھی مری تقدیر کو
مشکلاتِ زندگی سے اے خدا محفوظ رکھ
بخش دے مشکل کشائی ناخنِ تدبیر کو

50% LikesVS
50% Dislikes
0

اپنا تبصرہ بھیجیں