ابھی ہیں آگے بڑے مرحلے جو مشکل ہیں – نظم

روزنامہ ’’الفضل‘‘ ربوہ 17جنوری 2012ء میں مکرم فاروق محمودصاحب کی ایک غزل شائع ہوئی ہے۔ اس غزل سے انتخاب ہدیۂ قارئین ہے:

ابھی ہیں آگے بڑے مرحلے جو مشکل ہیں
پر امتحان کے اب آخری مراحل ہیں
بِچھا دئے تو سرِ راہ دیدہ و دل ہیں
پہ جانتا ہوں ، نہیں یار کے وہ قابل ہیں
خِرد نے اِن کو ڈبویا ، اِنہیں جنوں دے دے
پڑھے لکھے جو مرے آس پاس جاہل ہیں
لباسِ فقر میں ، تھامے ہوئے عنانِ زماں
یہ کیسے لوگ ترے قافلے میں شامل ہیں
نویدِ صبح ہے یہ آخری صدائے جَرَس
اُنہیں جگادے جو اَب بھی خبر سے غافل ہیں

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں

ur اردو
X