حسرت و یاس میں گل کھلیں گے کبھی – نظم

روزنامہ ’’الفضل‘‘ ربوہ 27؍مارچ 2008 ء میں مکرم ملک منیر احمد ریحان صابرؔ صاحب کا کلام شامل اشاعت ہے۔ اِس کلام میں سے انتخاب ہدیۂ قارئین ہے:

حسرت و یاس میں گل کھلیں گے کبھی
اپنے پیاروں سے ہم بھی ملیں گے کبھی
اے عزیزان من تم دعائیں کرو
اب خدا جلد لائے بہاروں کے دن

بام و در کھول کر چشمِ پُرنم لئے
کتنے بازو کھلے حسرتِ غم لئے
شہر خاموش میں اب جئیں نہ مریں
یوں گزرتے ہیں صابرؔ ہزاروں کے دن
اب خدا جانے ربوہ میں کب آئیں گے
وہ بہاروں کے دن یہ نظاروں کے دن

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں

ur اردو
X