دین مانگے نہ یہ دنیا مانگے – نظم

ماہنامہ ’’احمدیہ گزٹ‘‘ کینیڈا نومبرودسمبر 2009ء میں شامل اشاعت مکرم چودھری محمد علی صاحب کے کلام سے انتخاب پیش ہے:

دین مانگے نہ یہ دنیا مانگے
دلِ ناداں تجھے تنہا مانگے
رات کا چور مسافر بن کر
گھر کے اندر کوئی کمرہ مانگے
رُک گیا شہر پنہ کے باہر
دشت دیوار سے رستہ مانگے
قتل بھی میرا کرے وہ ناحق
مجھ سے انعام بھی اُلٹا مانگے

0
یہ مضمون شیئر کرنے کے لئے یہ چھوٹا لنک استعمال کریں۔ جزاک اللہ [https://khadimemasroor.uk/GvFEV]

اپنا تبصرہ بھیجیں