زیرِ لب کہیے ، برملا کہیے – نظم

روزنامہ ’’الفضل‘‘ ربوہ 22نومبر2008 ء میں محترم چوہدری محمد علی صاحب کا کلام شامل اشاعت ہے۔ اِس کلام میں سے انتخاب ہدیۂ قارئین ہے:

زیرِ لب کہیے ، برملا کہیے
کہیے کہیے مجھے برا کہیے
دیکھیے مت قریب سے مجھ کو
دُور سے تکیے ، پارسا کہیے
قاتلِ شہر میرے قتل کے بعد
مجھ کو اپنا کہے تو کیا کہیے
برسر دار بھی خموش رہا
اس کو مضطرؔ کا حوصلہ کہیے

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں

ur اردو
X