دل میں مچلتی ہے مرے ہر دم یہ آرزو – نظم

ماہنامہ ’’انصاراللہ‘‘ ربوہ مارچ 1995ء میں شائع ہونے والی مکرم عبدالسلام اسلام صاحب کی ایک نظم سے دو اشعار ملاحظہ فرمائیں:

دل میں مچلتی ہے مرے ہر دم یہ آرزو
نوع بشر کے غم میں ہو ہر آنکھ باوضو
اوروں کا درد بانٹ کر تسکینِ دل ملے
مستی ہو ایسی پیار کی شرمندہ ہو سبو
50% LikesVS
50% Dislikes
0

اپنا تبصرہ بھیجیں