وہ خوش نصیب جو شب زندہ دار ہوتے ہیں

روزنامہ ’’الفضل‘‘ ربوہ 25؍ اپریل 1996ء کے شمارہ کی زینت محترم نسیم سیفی صاحب کی ایک نظم کے دواشعار ملاحظہ فرمائیں:

وہ خوش نصیب جو شب زندہ دار ہوتے ہیں
نشان رحمت پروردگار ہوتے ہیں
انہی کو ملتی ہے تسکینِ قلب کی دولت
وفور شوق سے جو بے قرار ہوتے ہیں
50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں