وہ رشک مَلائک یہی تاج ہے – نظم

ماہنامہ ’’انصاراﷲ‘‘ ربوہ اپریل 2008ء میں مکرم عبدالسلام اسلامؔ صاحب کی ایک نظم سے انتخاب پیش ہے:

وہ رشک مَلائک یہی تاج ہے
یہی آدمیّت کی معراج ہے
یہ نُورِ خدا کی ہے جَلوہ گری
یہ تکوین کا نقطۂ محوری
’’عدُوئے مبیں ‘‘ اِس سے پامال ہے
قبائے خلافت تری ڈھال ہے
یہ زندہ تو زندہ ہے دین متیں
یہ قدرت کے جلوؤں کا عکسِ حسیں
اگر پاسبانی کا اِحساس ہے
سدا یہ امانت تیرے پاس ہے

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں

ur اردو
X