وہ ساقیٔ کوثر کی مے سے کچھ ہم کو پلائے گا ساقی – نظم

سہ ماہی ’’الجہاد‘‘ ناروے مارچ2007ء میں جلسہ سالانہ کے حوالہ سے شائع ہونے والی مکرم خواجہ عبدالمومن صاحب کی نظم سے انتخاب پیش ہے

وہ ساقیٔ کوثر کی مے سے کچھ ہم کو پلائے گا ساقی
مضراب سے دل کی تاروں کو پھر خوب ہلائے گا ساقی
جب ہر نگری سے پہنچیں گے دیوانے پیارے مہدی کے
پھر پرچمِ احمد کو اونچا وہ خوب اڑائے گا ساقی
جب تشنہ لبوں کے جلسہ میں مسرور کٹورے بھر دے گا
مومن بھی اس کی محفل میں کچھ پیاس بجھائے گا ساقی

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں