آنکھ اشکبار، دل حزیں، پر لب سیئے سیئے – نظم

روزنامہ ’’الفضل‘‘ ربوہ 5؍جولائی 2010ء میں شائع ہونے والی مکرم ضیاء اللہ مبشر صاحب کی ایک نظم سے انتخاب ہدیۂ قارئین ہے۔ اس نظم میں شہدائے لاہور کو خراج عقیدت پیش کیا گیا ہے۔

آنکھ اشکبار، دل حزیں، پر لب سیئے سیئے
ہم مرضیٔ خدا پہ ہیں سر خم کیے کیے
دل کو نہیں مجال کہ شکوہ کرے کوئی
گزری ہے عمر خون کے آنسو پئے پئے
لکھ دی پھر اہلِ صدق نے اک داستاں نئی
گردن کٹا کے عشق میں سجدہ کئے کئے
یہ کاروانِ اہلِ محبت عجیب ہے
ہر طفل و پیر شوق شہادت لیے لیے
کچھ جی رہے ہیں موت کے سائے میں بیٹھ کر
کچھ مر کے راہِ یار میں ہر پَل جئے جئے
لَو بڑھ گئی زمین کی روشن ہوا جہاں
ہم نے جوبیچ خاک کے کچھ رکھ دیئے دیئے

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں

ur اردو
X