خلافت سے محبت کی ملیں برکات پشتوں تک – نظم

روزنامہ ’’الفضل‘‘ ربوہ 25؍اکتوبر2008ء میں مکرم عبدالکریم قدسی صاحب کا کلام شامل اشاعت ہے۔ اِس کلام میں سے انتخاب پیش خدمت ہے:

خلافت سے محبت کی ملیں برکات پشتوں تک
اسی لطف و کرم کی ہو سدا برسات پشتوں تک
خلافت سے وفاداری بشرطِ استواری ہو
یہی ہو حاصل ایماں بہر اوقات پشتوں تک
سدا نورِ خلافت سے منور ہوں میری نسلیں
کسی لمحے جہالت کی نہ آئے رات پشتوں تک
خیالوں میں ، گھروں میں رزق اور الفاظ اُتریں گے
اگر ہم چومتے جائیں گے ان کے ہاتھ پشتوں تک

0
یہ مضمون شیئر کرنے کے لئے یہ چھوٹا لنک استعمال کریں۔ جزاک اللہ [https://khadimemasroor.uk/xmVYf]

اپنا تبصرہ بھیجیں