ترے لمسِ عقیدت کی عنایت ہے مرے آقا – نظم

روزنامہ ’’الفضل‘‘ ربوہ 4اکتوبر2008 ء میں مکرم ڈاکٹر عبدالکریم خالدؔ صاحب کا کلام شامل اشاعت ہے۔ اِس کلام میں سے انتخاب ہدیۂ قارئین ہے۔

ترے لمسِ عقیدت کی عنایت ہے مرے آقا
کہ اب دل میں فقط تیری محبت ہے مرے آقا
تجھے پا کر محبت نے کچھ ایسا رنگ پکڑا ہے
ذرا دل کا دھڑکنا بھی قیامت ہے مرے آقا
اگر تیرا اشارہ ہو تو تن من دھن لٹا دوں سب
مرا مقصد تو بس تیری اطاعت ہے مرے آقا
میں حاضر ہوں مرے دلبر یہ جاں حاضر یہ دل حاضر
ترے قدموں میں سر رکھنا سعادت ہے مرے آقا

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں

ur اردو
X