محترم سید عبدالحی شاہ صاحب

(مطبوعہ الفضل ڈائجسٹ، الفضل انٹرنیشنل 11 ستمبر 2020ء)

ماہنامہ ’’انصاراللہ‘‘ ربوہ ستمبر واکتوبر 2012ء کا شمارہ مکرم سیّد عبدالحی شاہ صاحب مرحوم کی یاد میں خصوصی اشاعت کے طور پر شائع کیا گیا ہے۔
مکرم کلیم احمد طاہر صاحب بیان کرتے ہیں کہ محترم سیّد عبدالحی شاہ صاحب کے ساتھ گیارہ سال تک کام کرنے کا موقع ملا لیکن کبھی آپ کو غصے میں نہیں دیکھا۔ ایک بار غصہ آیا بھی تو اتنی جلدی ختم ہوگیا جیسے آیا ہی نہیں تھا۔ بہت شستہ مزاح کرتے تھے جس سے دفتر میں اجنبیت کا ماحول نہیں رہتا تھا۔ اگر کسی سے کوئی وعدہ کرلیتے تو پوری کوشش کرتے۔ ایک بار مَیں نے اپنی بیٹی کی آمین میں آپ کو بطور مہمان خصوصی مدعو کیا جو نماز عصر کے بعد ہونا تھی۔ دوپہر کو آپ کی اہلیہ کو برین ہیمرج ہوگیا۔ اس پریشانی کے وقت بھی آپ کو آمین کا پروگرام یاد تھا۔ آپ نے باقاعدہ فون کرکے مجھے ایمرجنسی کی اطلاع دی۔ اگلے دن جب دفتر تشریف لائے تو خود چل کر میرے پاس آئے اور ایک بار پھر معذرت کی۔ آپ کی آواز سے ہی آپ کی پریشانی عیاں ہورہی تھی۔ میرے دل میں آپ کا احترام پہلے سے بھی بڑھ گیا۔
مَیں نے نیا کیمرہ خریدا اور آپ کے ساتھ تصویر بنوانے کی خواہش ظاہر کرتے ہوئےآپ کی تکلیف اور کمزوری کی وجہ سے عرض کیا کہ آپ کرسی پر ہی بیٹھے رہیں، مَیں ساتھ کھڑا ہوجاتا ہوں۔ آپ نے فرمایا یہ نہیں ہوسکتا۔ پھر باوجود کمزوری کے بڑی مشکل سے اُٹھ کر میز کے دوسری طرف پہنچے اور وہاں رکھی ہوئی دو کرسیوں میں سے ایک پر خود بیٹھے اور دوسری کرسی پر مجھے بیٹھنے کے لیے کہا۔

0
یہ مضمون شیئر کرنے کے لئے یہ چھوٹا لنک استعمال کریں۔ جزاک اللہ [https://khadimemasroor.uk/TN7EU]

اپنا تبصرہ بھیجیں