یہ مہر و ماہ اس کے ستارے اسی کے ہیں – نظم

روزنامہ ’’الفضل‘‘ ربوہ 16؍جنوری میں شامل اشاعت مکرمہ امۃالرشید بدر صاحبہ کی ایک نظم سے انتخاب پیش ہے:

یہ مہر و ماہ اس کے ستارے اسی کے ہیں
یہ جھلملاتے نُور کے دھارے اسی کے ہیں
پھولوں میں حسن ، تازگی ، خوشبو اسی کی ہے
قوسِ قزح میں رنگ یہ سارے اُسی کے ہیں
کھینچی ہے اس کے ہاتھ نے تصویر کائنات
چاروں طرف حسین نظارے اسی کے ہیں

50% LikesVS
50% Dislikes
0

اپنا تبصرہ بھیجیں