شکرقندی (Sweet Potato)

(مطبوعہ الفضل ڈائجسٹ، الفضل انٹرنیشنل 10 جولائی 2020ء)

ماہنامہ ’’تشحیذالاذہان‘‘ ربوہ اپریل 2011ء میں شکرقندی کے حوالہ سے ایک مختصر معلوماتی مضمون عزیزم عمران احمد کے قلم سے شائع ہوا ہے۔
شکرقندی ایک شیریں جڑ ہے۔ 750قبل مسیح میں اس کی کاشت کے آثار جنوبی امریکہ کے ملک پیرو (Peru) میں ملے ہیں۔ جنگ عظیم اوّل میں امریکہ میں آٹے کی کمی کو پورا کرنے کے لیے اس کا آٹا استعمال کیا جاتا تھا۔ اس وقت چین میں دنیا کی اسّی فیصد شکرقندی کاشت کی جاتی ہے۔
شکرقندی میں کاربوہائیڈریٹس کے علاوہ ریشہ (فائبر) وٹامن A اور وٹامن C پائے جاتے ہیں اور کیلشیم کی خاصی مقدار بھی پائی جاتی ہے۔ اپنے اجزا کی وجہ سے یہ میٹھی ہونے کے باوجود ذیابیطس کے مرض میں مفید ہے۔

0
یہ مضمون شیئر کرنے کے لئے یہ چھوٹا لنک استعمال کریں۔ جزاک اللہ [https://khadimemasroor.uk/7hl0o]

اپنا تبصرہ بھیجیں