ہمیں مٹائے گا کذب و شر سے، عدوّ خوش فہم کو یقیں ہے – نظم

(مطبوعہ الفضل ڈائجسٹ، الفضل انٹرنیشنل 14 اگست 2020ء) مجلس انصاراللہ جرمنی کے سہ ماہی’’الناصر‘‘اپریل تا جون 2012ء میں ایک محفل مشاعرہ کی رپورٹ شائع ہوئی ہے جس میں مکرم خواجہ حنیف تمنّا صاحب کا درج ذیل نمونہ کلام شامل ہے: ہمیں مٹائے گا کذب و شر سے، عدوّ خوش فہم کو یقیں ہے ہمیں تعجب …مزید پڑھیں

مرے گلستاں میں رونق، گو بہار سے ہوئی ہے – نظم

(مطبوعہ الفضل ڈائجسٹ، الفضل انٹرنیشنل 31 جولائی 2020ء) مجلس انصاراللہ جرمنی کے سہ ماہی‘‘الناصر’’اپریل تا جون 2012ء میں ایک محفل مشاعرہ کی رپورٹ شائع ہوئی ہے۔ اس رپوٹ میں شامل جناب محمد شریف خالد صاحب کے نمونہ کلام میں سے انتخاب درج ذیل ہے: مرے گلستاں میں رونق، گو بہار سے ہوئی ہے ترے فیض …مزید پڑھیں

بہت کم دوسروں سے، خود سے زیادہ بات کرتا ہوں – نظم

(مطبوعہ الفضل ڈائجسٹ، الفضل انٹرنیشنل 31 جولائی 2020ء) مجلس انصاراللہ جرمنی کے سہ ماہی‘‘الناصر’’اپریل تا جون 2012ء میں ایک محفل مشاعرہ کی رپورٹ شائع ہوئی ہے۔ اس رپوٹ میں شامل جناب مقصودالحق صاحب کے نمونہ کلام میں سے انتخاب درج ذیل ہے: بہت کم دوسروں سے، خود سے زیادہ بات کرتا ہوں اسی اُسلوب سے، …مزید پڑھیں

کبھی پُرسوز لہجے میں ہمیں قرآں سناتا ہے – نظم

(مطبوعہ الفضل ڈائجسٹ، الفضل انٹرنیشنل 24 جولائی 2020ء) مجلس انصاراللہ جرمنی کے سہ ماہی ’’الناصر‘‘ اپریل تا جون 2012ء میں مکرم مبارک صدیقی صاحب کی ایک نظم بعنوان ’’ایم ٹی اے‘‘ شائع ہوئی ہے۔ اس نظم میں سے انتخاب ہدیۂ قارئین ہے: کبھی پُرسوز لہجے میں ہمیں قرآں سناتا ہے کبھی حمد و ثناء کرتے …مزید پڑھیں

دشمنِ جاں گو مرے سارے کے سارے ہوگئے – نظم

(مطبوعہ الفضل ڈائجسٹ، الفضل انٹرنیشنل 17 جولائی 2020ء) مجلس انصاراللہ جرمنی کے سہ ماہی ’’الناصر‘‘ اپریل تا جون 2012ء میں ایک محفل مشاعرہ کی رپورٹ میں شامل نمونہ کلام میں سے جناب محمد اشرف ڈوگر صاحب کے کلام سے انتخاب ہدیۂ قارئین ہے: دشمنِ جاں گو مرے سارے کے سارے ہوگئے اس کی رحمت سے …مزید پڑھیں

راہوں میں خار وہ جو بچھاتے چلے گئے – نظم

(مطبوعہ الفضل ڈائجسٹ، الفضل انٹرنیشنل 17 جولائی 2020ء) مجلس انصاراللہ جرمنی کے سہ ماہی ’’الناصر‘‘ اپریل تا جون 2012ء میں ایک محفل مشاعرہ کی رپورٹ میں شامل نمونہ کلام میں سے جناب محمد اسحاق اطہر صاحب کے کلام سے انتخاب ہدیۂ قارئین ہے: راہوں میں خار وہ جو بچھاتے چلے گئے پلکوں سے اپنی ہم …مزید پڑھیں

خوں مرے پیاروں کا ہے لاہور کا میدان ہے – نظم

(مطبوعہ الفضل ڈائجسٹ، الفضل انٹرنیشنل 17 جولائی 2020ء) مجلس انصاراللہ جرمنی کے سہ ماہی ’’الناصر‘‘ اپریل تا جون 2012ء میں ایک محفل مشاعرہ کی رپورٹ میں شامل نمونہ کلام میں سے جناب راجہ محمد سلیمان صاحب کے کلام سے انتخاب ہدیۂ قارئین ہے: خوں مرے پیاروں کا ہے لاہور کا میدان ہے حرمتِ دیں کے …مزید پڑھیں

کافر کو اپنی فوج کی کثرت پہ ناز ہے – قطعہ

(مطبوعہ الفضل ڈائجسٹ، الفضل انٹرنیشنل 10 جولائی 2020ء) روزنامہ ’’الفضل‘‘ ربوہ 9؍جنوری 2013ء میں مکرم مولانا ظفر محمد ظفر صاحب کا درج ذیل قطعہ شامل اشاعت ہے: کافر کو اپنی فوج کی کثرت پہ ناز ہے طیارہ ، ٹینک ، توپ کی طاقت پہ ناز ہے مومن کا دِل بھی ناز سے خالی نہیں ظفرؔ …مزید پڑھیں

دل میں دھڑکی ہیں دعائیں ، منزلیں اپنی قریب – نظم

(مطبوعہ الفضل ڈائجسٹ، الفضل انٹرنیشنل 3 جولائی 2020ء) لجنہ اماء اللہ جرمنی کے رسالہ ’’خدیجہ‘‘ (شہداء نمبر۔ شمارہ 2۔ 2010ء) میں مکرم الطاف قدیر صاحب کی درج ذیل نظم شامل اشاعت ہے: دل میں دھڑکی ہیں دعائیں ، منزلیں اپنی قریب اک جہاں مسرور ہے ، صد شکر اپنا یہ نصیب پھر سلاسل کو ہے …مزید پڑھیں

اے مرے پیارے وطن کے ساتھیو – نظم

(مطبوعہ الفضل ڈائجسٹ، الفضل انٹرنیشنل 3 جولائی 2020ء) لجنہ اماء اللہ جرمنی کے رسالہ ’’خدیجہ‘‘ (شہداء نمبر۔ شمارہ 2۔2010ء) میں مکرمہ عاصمہ اکرام صاحبہ کی ایک نظم شامل اشاعت ہے جس میں سے انتخاب درج ذیل ہے: اے مرے پیارے وطن کے ساتھیو کیا یہی اسلام کہتا ہے بھلا تم نے جو چاہا ، کیا …مزید پڑھیں

خدا کے بندوں کو اکثر ستایا جاتا ہے – نظم

(مطبوعہ الفضل ڈائجسٹ، الفضل انٹرنیشنل 26 جون 2020ء) لجنہ اماء اللہ جرمنی کے رسالہ ’’خدیجہ‘‘ (شہداء نمبر۔ شمارہ 2۔2010ء) میں مکرم محمد صدیق امرتسری صاحب کی درج ذیل نظم شامل اشاعت ہے: خدا کے بندوں کو اکثر ستایا جاتا ہے دل ان کا دنیا میں ناحق دُکھایا جاتا ہے غرض خدا سے ہو جن کو …مزید پڑھیں

آسماں پھر دوستو زیر و زبر ہونے کو ہے – نظم

(مطبوعہ الفضل ڈائجسٹ، الفضل انٹرنیشنل 19 جون 2020ء) لجنہ اماء اللہ جرمنی کے رسالہ ’’خدیجہ‘‘ (شہداء نمبر۔ شمارہ 2۔2010ء) میں مکرمہ ڈاکٹر فہمیدہ منیر صاحبہ کی درج ذیل غزل شامل اشاعت ہے: آسماں پھر دوستو زیر و زبر ہونے کو ہے سچ یہ پتھر کی زمیں حالات پہ رونے کو ہے پھر صلاحیت کی چٹان …مزید پڑھیں

بے سبب عداوت میں – نظم

(مطبوعہ الفضل ڈائجسٹ، الفضل انٹرنیشنل 5 جون 2020ء) لجنہ اماء اللہ جرمنی کے رسالہ ’’خدیجہ‘‘ (شہداء نمبر۔ شمارہ 2۔2010ء) میں مکرم مبشر احمد محمود صاحب کی درج ذیل نظم شامل اشاعت ہے: بے سبب عداوت میں بے جہت شقاوت میں کج روی کی وحشت میں گمرہی کی ظلمت میں آتشِ بولہبی کو کچھ نظر نہیں …مزید پڑھیں

بِنا اخلاق غالب ہوں ، یہ دنیاوی اکڑ ہوگی – نظم

(مطبوعہ الفضل ڈائجسٹ، الفضل انٹرنیشنل 5 جون 2020ء) روزنامہ ’’الفضل‘‘ ربوہ 23؍جنوری 2013ء میں مکرم اطہر حفیظ فراز صاحب کی پانچ بنیادی اخلاق کے حوالے سے ایک نظم شامل اشاعت ہے۔ اس نظم میں سے انتخاب ہدیۂ قارئین ہے: بِنا اخلاق غالب ہوں ، یہ دنیاوی اکڑ ہوگی تنا افلاک چُھولے گا اگر مضبوط جَڑ …مزید پڑھیں

اخلاص ہے دستورِ غلامانِ خلافت – نظم

(مطبوعہ الفضل ڈائجسٹ، الفضل انٹرنیشنل 22 مئی 2020ء) ماہنامہ ’’مصباح‘‘ ربوہ مئی 2011ء میں شائع ہونے والی ایک نظم میں سے انتخاب ہدیۂ قارئین ہے: اخلاص ہے دستورِ غلامانِ خلافت تسلیم سے مشروط ہے پیمانِ خلافت یہ لعلِ نبوّت تو ہے اک گوہرِ یکتا بعد اس کے گراں مایہ ہے مرجانِ خلافت استادؐ سے شاگردؑ …مزید پڑھیں

خلافتِ احمدیہ کے مقام کے حوالے سے منتخب اشعار

(مطبوعہ الفضل ڈائجسٹ، الفضل انٹرنیشنل 22 مئی 2020ء) روزنامہ ’’الفضل‘‘ ربوہ 25؍مئی 2013ء میں خلافتِ احمدیہ کے مقام کے حوالے سے منتخب اشعار شامل ہیں۔ ان میں سے بعض قبل ازیں ’’الفضل ڈائجسٹ‘‘ کا حصہ بنائے جاچکے ہیں۔ دیگر ذیل میں ہدیۂ قارئین ہیں: مکرم محمد صدیق امرتسری صاحب کے کلام سے انتخاب: امام وقت …مزید پڑھیں

پیروں تلے زمیں نہیں سر پہ آسماں نہیں – نظم

(مطبوعہ الفضل ڈائجسٹ، الفضل انٹرنیشنل 8مئی 2020ء) روزنامہ ’’الفضل‘‘ ربوہ یکم فروری 2013ء میں مکرمہ امۃالباری ناصر صاحبہ کی ایک غزل شامل اشاعت ہے۔ اس غزل میں سے انتخاب پیش ہے: پیروں تلے زمیں نہیں سر پہ آسماں نہیں لگتا ہے کُل جہان میں امن نہیں اماں نہیں اچھی خبر کے واسطے کان ترس ترس …مزید پڑھیں

طنز کے تیر چلاتے ہیں جو ہر جانے انجانے پہ – نظم

(مطبوعہ الفضل ڈائجسٹ، الفضل انٹرنیشنل یکم مئی 2020ء) روزنامہ ’’الفضل‘‘ ربوہ 9؍جنوری 2013ء میں محترمہ صاحبزادی امۃالقدوس صاحبہ کی ایک خوبصورت نظم شامل اشاعت ہے۔ اس طویل نظم میں سے انتخاب ہدیۂ قارئین ہے: طنز کے تیر چلاتے ہیں جو ہر جانے انجانے پہ شک کی نظریں ڈالتے رہتے ہیں اپنے بیگانے پہ چھوڑ انہیں …مزید پڑھیں

جو خواہاں ہیں ملے عزت ، کریں وہ دین کی خدمت – نظم

روزنامہ ’’الفضل‘‘ ربوہ 31؍جنوری 2013ء میں مکرم خواجہ عبدالمومن صاحب کی ایک نظم شامل اشاعت ہے۔ اس نظم میں سے انتخاب پیش ہے: جو خواہاں ہیں ملے عزت ، کریں وہ دین کی خدمت ملے گی حق تعالیٰ سے انہیں ہر گام پہ برکت خدائے قادر مطلق بنے گا حامی و ناصر عطا ہوگی انہیں …مزید پڑھیں

صاحبِ لولاک ختم الانبیاء – نعت

روزنامہ ’’الفضل‘‘ ربوہ 7؍جنوری 2013ء میں مکرم مولوی ظفر محمد ظفر صاحب کی ایک نعت شامل اشاعت ہے۔ اس نعت میں سے انتخاب پیش ہے: صاحبِ لولاک ختم الانبیاء مقتدائے انبیاء و اصفیاء تیری آمد سے ہے یہ عقدہ کھلا ارفع و اعلیٰ ہے تُو بعد از خدا لاجرم ہے تُو ہی ختم الانبیاء تُو …مزید پڑھیں

یہ علم و فضل کا اِک بحرِ بے کراں ہیں سبھی – ںظم

روزنامہ‘‘الفضل’’ربوہ 3 جنوری 2013ء میں روحانی خزائن کے حوالے سے کہی گئی مکرم عبدالصمد قریشی صاحب کی ایک نظم شائع ہوئی ہے۔ اس نظم میں سے انتخاب ہدیہ قارئین ہے: یہ علم و فضل کا اِک بحرِ بے کراں ہیں سبھی جہاں میں حق و صداقت کی ترجماں ہیں سبھی چمک رہی ہیں یہ رفعت …مزید پڑھیں

دل مچلنے لگا کیا ہوا اے خدا کس کی رحمت مجھے آج گرما گئی – نعت

ماہنامہ ’’مشکوٰۃ‘‘ قادیان جون و جولائی 2012ء میں مکرم مبشر احمد صاحب وسیم گورداسپوری کی ایک نعت شامل اشاعت ہے۔ اس نعت میں سے انتخاب پیش ہے : دل مچلنے لگا کیا ہوا اے خدا کس کی رحمت مجھے آج گرما گئی آج بہلا گئی آج تڑپا گئی اور ابرِ کرم مجھ پہ برسا گئی …مزید پڑھیں

محمدؐ رحمۃٌ لِّلْعَالَمِیں ہیں
– نعت

ماہنامہ ’’مشکوٰۃ‘‘ قادیان جون و جولائی 2012ء میں مکرم مولوی محمد صدیق صاحب امرتسری کی ایک نعت شامل اشاعت ہے۔ اس نعت میں سے انتخاب پیش ہے: محمدؐ رحمۃٌ لِّلْعَالَمِیں ہیں محمدؐ نورِ جانِ مومنیں ہیں محمدؐ سالکِ راہِ مبیں ہیں شہِ ابرار و خَتْمُ الْمُرْسَلِیں ہیں محمد زینتِ عرشِ بریں ہیں محمدؐ سرورِ دنیا …مزید پڑھیں

شفق سمیٹے دھنک لپیٹے بدن میں اُس کے حیات اُتری – نظم

ماہنامہ ’’احمدیہ گزٹ‘‘ کینیڈا جون 2012ء میں مکرم طاہر عدیم صاحب کی ایک نظم بعنوان ’’ہدیہ عقیدت بحضور حضرت مسیح موعود علیہ السلام‘‘ شائع ہوئی ہے۔ اس نظم میں سے انتخاب ہدیۂ قارئین ہے: شفق سمیٹے دھنک لپیٹے بدن میں اُس کے حیات اُتری کہ جیسے ظُلمت میں نُور بن کر زمیں پہ اِک کائنات …مزید پڑھیں

سلام اُس پر کہ جو جامِ وصالِ یار لایا تھا – نظم

روزنامہ ’’الفضل‘‘ ربوہ 21؍مارچ 2015ء میں مکرم عبدالسلام صاحب کی ایک نظم بعنوان ’’روحانی مریضوں کا طبیب‘‘ شائع ہوئی ہے۔ اس نظم میں سے انتخاب ہدیۂ قارئین ہے: سلام اُس پر کہ جو جامِ وصالِ یار لایا تھا سلام اُس پر کہ جس نے مُردہ رُوحوں کو جِلایا تھا جسے اللہ نے عشقِ محمدؐ کی …مزید پڑھیں